کروشیا سرحدی سکیورٹی میں اضافہ کررہا ہے کیونکہ بوسنیا ہجرت کو روکنے کا ارادہ کر ریا ہے

کروشین حکام کی طرف سے اپنی سرحدوں کو محفوظ کرنے میں مدد کی درخواست کے بعد فرونٹیکس کے نگرانی والے ہوائی جہاز نے جولائی کے وسط میں کروشین سرحد کی نگرانی شروع کی.فرنٹیکس ایک ایسی ایجنسی ہے جو یورپی یونین کے ممالک کو اپنی بیرونی سرحدوں کا انتظام کرنے میں مدد کرتا ہے.

فرونٹیکس کے مطابق، ہوائی جہاز سرحد پر آمد و رفت کی نگرانی کرتا ہے، ویڈیو اور دوسرے ڈیٹا کو براہ راست ایجنسی کے مرکزی ہیڈکوارٹر میں نشر کرتا ہے. وہاں، ماہرین کی ایک ٹیم اس اعداد و شمار کا تجزیہ کرتی ہے اور متعلقہ قومی حکام کو انتباہ کرتی ہے. ہر ماہ، مغربی بلقان کی سرحدوں کی نگرانی کے لیے ہوائی جہاز 100 گھنٹے تک کام کرے گا.

فرونٹیکس نے پہلے سے ہی کروشیا میں 10 افسروں کو دستاویز میں فراڈ اور چوری شدہ گاڑیوں کا پتہ لگانے میں مدد فراہم کرنے کے لیے بھیجا ہے.

گزشتہ مہینے میں 3000 سے زائد پناہ گزین اور تارکین وطن کروشیا میں داخل ہوئے، اور ایسی ہی تعداد سربیہ اور مونٹینیگرو سے بوسنیا اور ہرزیگوینا میں داخل ہوئی.

بوسنیا بھی اپنی سرحدوں پر سیکورٹی کو مضبوط بنانے کی منصوبہ بندی کر رہا ہے. ملکی سلامتی کے وزیر، ڈراگن میکٹک، بوسنیا میں فرونٹیکس کے افسران چاہتے ہیں. انہوں نے یورپی کمیشن سے توقع کی ہے کہ وہ جلد ہی ایک معاہدے پر دستخط کے ذریعے فرونٹیکس کو ملک میں ہجرت اور منظم جرائم کو روکنے میں مدد کی اجازت دیے گی.

چیک جمہوریہ نے حال ہی میں بوسنیا کو € 1 ملین یوروکی پیشکش کی ہے جس سے بوسنیا کے اہلکار کیمرے، دوربین اور ڈرون خریدیں گے۔

ملکی سلامتی کے وزیر نے کہا کہ وہ سربیا اور مونٹینیگرو کے ساتھ سرحد پر بوسنیائی فوج کو تعینات کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں. لیکن سب سے پہلے، بوسنیا کو اپنے قوانین میں ترمیم کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ صرف سرحدی پولیس کو ہی وزارت سلامتی کی طرف سے، فی الحال سرحدوں کی نگرانی کرنے کا اختیار ہے.

کور فوٹو © یورپی یونین