نمبروں کے حساب سے بلغاریہ میں سیاسی پناہ 📊

ہم نے بلغارین اسٹیٹ ایجنسی برائے پناہ گزین (SAR) سے سیاسی پناہ کے اعداد و شمار کے بارے میں پوچھا تھا, ہم نے یہ جانا۔ 🤔

بلغاریہ میں نامنظوری کی شرح دوبارہ بڑھ گئی ہے

Statistika-9_URDU_2 ریاستی ایجنسی برائے پناہ گزین کے اعداد و شمار

گزشتہ دو سال سے، دوگنا سے زیادہ تعداد میں پناہ کی درخواستیں مسترد کی گئیں۔

2015 میں، ہر 10 پناہ کی درخواستوں میں سے تقریباً ایک کو مسترد کر دیا گیا۔ جو 2016 میں، آدھے سے زیادہ کودی گئی ہر 10 میں سے 5۔

2017 میں یہ تھوڑی اور بڑھ گئی: پچھلے سال ہر 10 پناہ کی درخواستوں میں سے 6 سے زائد کو مسترد کر دیا گیا۔

گزشتہ سال بلغاریہ میں افغانستان میں سے تقریبا کسی کو پناہ نہیں ملی

Statistika-9_URDU_3-1 ریاستی ایجنسی برائے پناہ گزین کے اعداد و شمار

اگرچہ افغانستان سے پناہ گزینوں نے کسی دوسرے قومیت کے مقابلے میں سب سے زیادہ درخواست درج کیں، بلغاریہ نے تقریبا ان سب کو مسترد کر دیا: ٪98.4۔ یہ شرح یورپ کے دیگر ممالک کے مقابلے میں غیر معمولی طور پر زیادہ ہے۔

دی اسائلم انفورمیشن ڈیٹا بیس/ پناہ کا معلوماتی ڈیٹا بیس یہ رپورٹ کیا گیا کہ 2017 میں، افغانستان سے لوگوں کی پناہ کی درخواستوں کو یورپ بھر میں بہت مختلف شرحوں پر قبول کیا گیا تھا، جو بلغاریہ میں سب سے کم ہے.

فرانس میں، افغانستان کے شہریوں کی 83.1 فیصد پناہ کی درخواستوں کو قبول کیا گیا تھا۔ بلجئیم میں شرح 58 فیصد تھی، جرمنی میں 47 فیصد اور ہنگری میں 30 فیصد۔

گزشتہ سال، یونانی پناہ گزین سروس نے رپورٹ کیا کہ یونان میں درج کی گئی افغانستان سے 63.6 فیصد پناہ کی درخواستوں پر مثبت فیصلے ہوئے تھے.

عراق اور پاکستان کے لوگوں کو بھی اعلی درجہ کی نامنظوری کی شرح، کا سامنا کرنا پڑا

Statistika-9_URDU_4 ریاستی ایجنسی برائے پناہ گزین کے اعداد و شمار

بلغاریہ نے گزشتہ سال 88.6 فیصد عراقی عوام کی طرف سے درج کردہ درخواستوں کو مسترد کیا۔

اس کے مقابلے میں: پچھلے سال، یونانی پناہ گزینی سروس نے عراق سے لوگوں کی بہت کم نامنظوری کی شرح کی اطلاع دی: 27.2 فیصد.

بلغاریہ نے گزشتہ سال پاکستان کے شہریوں کی 98.6 فیصد پناہ کی درخواستوں کو مسترد کیا۔

اس کے مقابلے میں: یونان اسی طرح کے نمبر کی رپورٹ دیتا ہے. گزشتہ سال یونان نے کہا کہ پاکستان کے شہریوں کی مسترد شدہ شرح 97.7 فیصد ہے.

افغانستان، عراق اور شام کی قومیتیں بلغاریہ میں پناہ طلب کرنے میں سب سے اوپر رہیں

Statistika-9_URDU_8 ریاستی ایجنسی برائے پناہ گزین کے اعداد و شمار

کئی سالوں سےافغانستان، عراق اورشام بلغاریہ میں پناہ گزین کی تعداد میں سب سے اوپر کے ممالک رہے ہیں۔

گزشتہ سال درج کی گئی 3،700 درخواستوں میں سے، 3،132 ان تین ممالک میں سے تھیں.

زیادہ تر درخواست دہندگان مرد تھے

Statistika-9_URDU_5 ریاستی ایجنسی برائے پناہ گزین کے اعداد و شمار

پچھلے سال مرد پناہ گزین بلغاریہ میں تقریبا 75 فیصد تھے. عورتوں کو مردوں کے مقابلے میں تقریبا ایک ہی تعداد کی منظوری ملی۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ بہت سے مردوں کو مسترد کردیا گیا تھا.

Statistika-9_URDU_7 ریاستی ایجنسی برائے پناہ گزین کے اعداد و شمار

مردوں اور عورتوں کوایک ہی طرح کی شرح سے مسترد کیا گیا تھا، لیکن عورتیں کو مردوں کے مقابلے میں مکمل پناہ گزین کی حیثیت حاصل کرنے کےامکان زیادہ تھےء.

تقریبا آدگی خواتین جنہیں قبول کیا گیا تھا انہیں پناہ گزین کی حیثیت ملی، اور نصف نے انسانی تحفظ حاصل کیا۔ مردوں کو پناہ گزین کی حیثیت کے مقابلے میں انسانی تحفظ ملنے کا زیادہ امکان تھا.

1000 سے زائد افراد ا بھی تک فیصلے کے منتظر ہیں

Statistika-9_URDU_1 ریاستی ایجنسی برائے پناہ گزین کے اعداد و شمار

2017 میں، SAR کو 2016 اور 2015 کے مقانلے میں 5 گُنا کم پناہ کی درخواستیں ملیں۔

درخواستوں میں کمی کی وجہ سے SAR بہت سے زیر التواء مقدمات کو حل کر سکیں۔ ابھی تک، 1،301 افراد کے دعووں پر کوئی فیصلہ نہیں مل سکا. کچھ کافی سالوں سے انتظار کر رہے ہیں.

سوالات ہیں؟ کسی وکیل سے رابطہ کریں

اگر آپ نے بلغاریہ میں پناہ گزین کی درخواست دی ہے تو، آپ کو ایک وکیل سے مدد حاصل کرنے کا حق ہے.

ہماری ویب سائٹ سے مزید جانئیے. آپ ہمیں مزید معلومات کے لیئے ہمیشہ فیس بک پر پیغام بھی بھیج سکتے ہیں۔

کور فوٹو © ایوو ڈاسکالوو