دو مہاجرین نے اپنے جرمن پڑوسیوں کو جلتے ہوئے گھروں سے بچایا

چار دن کے دوران، دو مختلف جرمن شہروں میں دو مہاجرین ہیروز نے اپنے پڑوسیوں کو جلتے ہوئے گھروں سے بچا لیا۔

خبروں کے مطابق، مجموعی طور پردو بہادر مردوں نے تین بچے اور دو بالغ بچائے۔


سے

WDR :

feuer-swisttal-buschhoven-100__v-gseapremiumxl

30 نومبر کو شمال رہئن ویسٹفالیہ North Rhine-Westphalia میں ایک عراقی پناہ گزین کی آنکھ جب کھلی تو کوئی مدد کے لیے پکار رہا تھا۔

مہوان، 29، نے کھڑکی سے باہر دیکھا کہ ساتھ والے گھر کو آگ لگی ہے، اور ایک بچا جو وہاں رہتا تھا اس میں پھنسا ہوا تھا۔

مہوان سیڑھی لینے بھاگا اور اُسے آتش زده گھر کے ساتھ کھڑی کر دی۔ بچا حفاظت سے نیچے اتر آیا۔

پھر لڑکے کا بھائی نموندار هوا اور وہ بھی نیچے اُتر گیا.

لڑکوں نے مہوان کو بتایا کہ اُن کے والد اور بہن گھر کےپیچھے کی طرف سو رہے ہیں.

پولیس کے ساتھ مل کر، مہوان نے باپ اور بہن کو بھی بچا لیا.

گھر والوں کو زہریلے دھویں کے علاج کے لیے ہسپتال لے جایا گیا ۔

مہوان ایک سال سے زیادہ عرصے سے بون کے قریب، شمال رہئن ویسٹفالیہ North Rhine-Westphalia م میں ساتھ والے گھر میں رہائش پذیر تھا۔

یہاں مقامی میئر سے بات کر رہا ہے

WhatsApp-Image-2017-12-15-at-8.33.43-PM

سے

سٹٹگارٹر زیٹنگ Stuttgarter Zeitung :

3 دسمبر کو، ایک پناہ گزین اور ایک باپ نے" سٹٹگارٹر Stuttgart " کے قریب، لینڈکریس شوابس Landkreis Schwäbisch ہال سے اپنے پڑوسی کو آتش ذدہ گھر سے بچایا۔

امدادی سرگرمی کے دوران، پناہ گزین شخص زہریلے دھویں کا شکار ہو گیا اور ہسپتال جانا پڑا۔

پڑوسی خود ٹھیک تھا.


کسی دوسرے #مہاجر ہیرو کو جانتے ہیں؟ فیس بک پر ان کے بارے میں ہمیں بتائیں.